Eloquence – 29

یہ طے ہے کہ محبت، تخلیق، تاریخ اور ضمیر کو شکست نہیں ہو سکتی۔ دشواری یہ ہے کہ یہ لڑائی نتیجے کی ضمانت لے کر نہیں لڑی جاتی۔ امکانات کے گھنے جنگل کی تاریک رات ہے اور بھیتر کی مدہم لو میں پیش قدمی کرنا ہے۔ گھات سے بچتے ہوئے راستہ بنانا ہے۔ ابھی وہ بندوق تیار نہیں ہوئی جو محبت کو مغلوب کر سکے، ابھی وہ بندوبست استوار نہیں ہو سکا جو تخلیق پہ بند باندھ سکے، ابھی وہ تجزیہ کار پیدا نہیں ہوا جو انصاف کو دفن کر سکے، ابھی وہ وہ لشکر مرتب نہیں ہو سکا جو ضمیر انسانی کو خاموش کر سکے۔

وجاہت مسعود

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s